مجھے بتایا گیا کہ پارلیمنٹ کوئی اور چلا رہا ہے، نواز شریف

ویب ڈیسک

سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے کہا کہ انہیں بتایا گیا ہے کہ ممبران کی بدولت پارلیمنٹ کو کوئی اور چلا رہا ہے۔

0 0
Read Time:3 Minute, 6 Second

سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف نے کہا کہ انہیں بتایا گیا ہے کہ ممبران کی بدولت پارلیمنٹ کو کوئی اور چلا رہا ہے۔

انہوں نے پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’لوگ مجھے بتاتے ہیں کہ کوئی اور پارلیمنٹ چلا رہا ہے، دوسرے لوگ آئے دن کے ایجنڈے اور بلوں پر ووٹ ڈالنے کے بارے میں ہدایات دیتے ہیں‘۔

خیال رہے اسی طرح کے خیالات کا اظہار سابق وزیراعظم کی صاحبزادی اور مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کیے تھے۔

انہوں نے کہا تھا کہ سیاسی فیصلے جنرل ہیڈ کواٹر میں نہیں بلکہ پارلیمنٹ میں ہونے چاہیے۔

آج کے اجلاس کے دوران ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ نوآبادتی طاقتوں سے آزادی مل گئی اور اب اپنے ہی لوگوں کے ہاتھوں غلام بن گئے۔

انہوں نے کہا کہ ’آج ہم آزاد شہری نہیں ہیں‘۔

مریم نواز کی جانب سے شیئر کی جانے والی ایک اور ویڈیو میں سابق وزیر اعظم نے کہا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) میں ایک کرنل کو اپنے خلاف مقدمے کی سماعت کے دوران چہرہ چھپاتے دیکھا جا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’چہرہ چھپانے کے پیچھے کیا وجہ تھی؟ آپ کو بدنما کیا جارہا تھا اسی وجہ سے آپ نے اپنا چہرہ چھپا لیا۔

نواز شریف نے پارٹی کی طرف سے جاری ایک الگ بیان میں یہ بھی کہا کہ وہ اپنے بھائی اور قومی اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما شہباز شریف کی گرفتاری سے رنجیدہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’تاہم جو کچھ ہو رہا ہے اس سے ہماری عزم کمزور نہیں ہوں گے اور پارٹی نے اپنی کوششیں مزید تیز کردی۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ ’ہمیں فخر ہے کہ ہماری پارٹی کے کارکنان جرات کے ساتھ موجودہ صورتحال کا سامنا کر رہے ہیں، ہمارے بچوں کے ساتھ سلوک کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ شہباز شریف نے ان اوقات میں بے مثال طاقت اور ہمت کا مظاہرہ کیا اور ایمانداری کے ساتھ قوم کی خدمت کرنے پر اپنے بھائی کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

نواز شریف نے کہا کہ شہباز شریف نے پنجاب میں بجلی گھروں کے قیام کے لیے دن رات کام کیا۔

نواز شریف نے سرکاری افسران کو خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے توانائی کی قلت کو دور کرنے میں کردار ادا کیا۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف مشکل کی صورت میں کبھی نہیں جھکے۔

مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے ٹویٹر پر کہا کہ مذکورہ اجلاس میں شہباز شریف کی گرفتاری سے پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کرنے اور موجودہ سیاسی منظر نامے کی روشنی میں مستقبل کی حکمت عملی تیار کرنے کے لیے بلایا گیا تھا یہ بات

تحریک انصاف کی زیرقیادت حکومت اور اپوزیشن کے مابین تعلقات حالیہ دنوں میں مزید کشیدہ ہوگئے ہیں۔

اپوزیشن نے اے پی سی کے انعقاد کے بعد حکومت کے خلاف ایک وسیع و عریض تحریک کا اعلان کیا تھا اور سیاست میں فوج کی مداخلت پر شدید تنقید کی تھی۔

21 ستمبر کو ہونے والی اے پی سی کے بعد سول ملٹری اجلاسوں اور ملاقاتوں سے متعلق متعدد انکشافات سامنے آئے تھے۔

سب سے اہم بات یہ ہے کہ یہ انکشاف ہوا کہ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ اور انٹر سروسز انٹلی جنس کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید نے کثیر الجہتی کانفرنس سے چند روز قبل حزب اختلاف کی اہم شخصیات سے ایک میٹنگ کی تھی اور انہیں سیاسی امور میں فوج کو گھسیٹنے سے گریز کرنے کی صلاح دی تھی۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

'منگنی مبارک ہانیہ' کیوں ٹرینڈ کررہا ہے؟

گزشتہ دنوں اداکارہ و ماڈل ہانیہ عامر کا نام گلوکار عاصم اظہر کو صرف دوست کہنے پر سوشل میڈیا پر زیر گردش تھا۔
Haniya-Aamir's-wSD