کورونا کی دوسری لہر: سندھ بھر کے مدارس میں تعلیمی سرگرمیاں بند کرنے کا فیصلہ

ویب ڈیسک
0 0
Read Time:1 Minute, 30 Second

حکومت سندھ نے کورونا وائرس کی دوسری لہر کے دوران بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر صوبے بھر کے مدارس میں تعلیمی سرگرمیاں فوری طور پر بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

محکمہ داخلہ سندھ سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق صوبائی حکومت نے سندھ وبائی امراض ایکٹ 2014 کے تحت صوبے بھر کے مدارس میں تمام تعلیمی سرگرمیاں فوری طور پر بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ سیکریٹری محکمہ اوقاف و مذہبی امور اور متعلقہ ڈویژنز کے کمشنرز و ڈپٹی کمشنرز کو اس قانون کے سیکشن 3 (ون) کے تحت مزیر احکامات، ہدایات اور نوٹسز جاری کرنے کے اختیارات حاصل ہیں۔

محکمہ داخلہ سندھ نے نوٹی فکیشن میں مزید کہا ہے کہ ڈپٹی کمشنرز، اسسٹنٹ کمشنرز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے انسپکٹر یا مساوی رینک کے افسران کو اس حکم نامے اور ہدایات کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کا اختیار حاصل ہے۔

واضح رہے کہ وبا کی دوسری لہر کے دوران سندھ میں یومیہ سب سے زیادہ کیسز سامنے آرہے ہیں۔

گزشتہ روز نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کراچی میں سب سے زیادہ مثبت کیسز کی شرح دیکھی گئی جو 18.76 فیصد تھی، اس کے بعد حیدرآباد میں 16.56 اور پشاور میں 15.99 فیصد کی شرح رپورٹ ہوئی۔

صوبوں اور علاقوں میں مثبت کیسز کی شرح دیکھیں تو سندھ میں سب سے زیادہ 14.8 فیصد شرح رہی۔

یاد رہے کہ کورونا کی دوسری لہر کے پیش نظر ملک بھر میں 26 نومبر سے 10 جنوری تک عصری تعلیم کے سرکاری، نیم سرکاری اور نجی تعلیمی ادارے بند کردیے گئے تھے۔

تاہم مدارس بند کرنے کے حوالے سے کوئی اعلان نہیں کیا گیا تھا۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

بلاول بھٹو کی سندھ پولیس کی درخواست پر علی وزیر کی گرفتاری کی مذمت

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے رکن قومی اسمبلی اور پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے رہنما علی وزیر کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے اسے ‘جمہوری روایات کے منافی’ قرار دیا ہے۔ اپنے بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ جلسے اور عوامی […]
bilawal-zardari-wSD