نیپرا نے بجلی کے نرخوں میں اضافے کا فیصلہ محفوظ کرلیا

ویب ڈیسک

اسلام آباد: فرنس آئل پر مبنی مہنگی بجلی پیدا کرنے کے جواز پر سوال اٹھانے کے بعد نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے سابق واپڈا ڈسٹری بیوشن کمپنیوں (ڈسکو) کی جانب سے بجلی کے نرخوں میں 86 پیسے فی یونٹ اضافے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

0 0
Read Time:2 Minute, 24 Second

اسلام آباد: فرنس آئل پر مبنی مہنگی بجلی پیدا کرنے کے جواز پر سوال اٹھانے کے بعد نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے سابق واپڈا ڈسٹری بیوشن کمپنیوں (ڈسکو) کی جانب سے بجلی کے نرخوں میں 86 پیسے فی یونٹ اضافے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

اتھارٹی کے وائس چیئرمین سیف اللہ چٹھہ کی زیرصدارت ایک عوامی سماعت کے بعد جاری بیان کہا گیا کہ فیصلہ سماعت کے دوران نیشنل پاور کنٹرول سینٹر (این پی سی سی) کے بیانات کے حوالے سے جائزہ کرنے کے بعد جاری کیا جائے گا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ افسران نے سماعت کے اختتام سے قبل کہا تھا کہ انہوں نے محصولات میں فی یونٹ میں تقریباً 84 پیسے اضافے کی تجویز پیش کی ہے جس سے محصولات 12 ارب روپے ہوں گے۔

تاہم جب ٹی وی چینلز نے 84 پیسے اضافے کے بارے میں ٹِکر چلائے تو نیپرا نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ‘فی الحال اس معاملے پر اتھارٹی نے کوئی فیصلہ نہیں کیا’۔

لیکن اس سے پہلے ہی سیاسی حلقوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی تھی۔

مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے مطلوبہ نرخوں میں اضافے پر شدید رد عمل کا اظہار کیا اور اسے ظالمانہ اقدام قرار دیا۔

شہباز شریف کے مطابق سستی ایل این جی نہ خریدنا حکومت کی مجرمانہ غفلت تھی جس کی وجہ سے فرنس آئل پر مبنی بجلی کی وجہ سے محصولات میں اضافہ کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان گندم، آٹا اور چینی سے لوٹی ہوئی رقم سے اپنے مافیا دوستوں کی جیبیں بھر رہے ہیں جبکہ پاکستانی عوام بھوک سے مر رہے ہیں۔

شہباز شریف نے کہا کہ معیشت، صنعت، کاروبار اور روزگار بری طرح متاثر ہیں جبکہ حکومت اضافی ٹیکس اور محصولات میں اضافے سے قوم کو کچل رہی ہے۔

صدر مسلم لیگ نے کہا کہ انتظامیہ نے پہلے ہی بجلی اور گیس کی قیمتوں میں ریکارڈ اضافہ کیا تھا اور وزیر اعظم عمران خان کے پاس ان نرخوں میں اضافے کے بعد کے الیکٹرک کو تنقید کا نشانہ بنانے کی کوئی اخلاقی بنیاد نہیں ہے۔

اس ضمن میں پیپلز پارٹی کے قانون ساز شیری رحمٰن نے بھی محصولات میں اضافے پر تنقید کی اور اسے فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کے الیکٹرک کو اضافے پر جرمانہ عائد کررہی ہے اور دوسری طرف خود بجلی کے نرخوں میں بھی اضافہ کر رہی ہے۔

رہنما پیپلز پارٹی نے مطالبہ کیا کہ انتظامیہ لوگوں کو اپنی بد انتظامی اور نااہلی کی سزا نہ دے۔

سنٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) جس نے ڈسکوس کی جانب سے ماہانہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے لیے ٹیرف پٹیشن دائر کی تھی، نے دعوی کیا ہے کہ بیس ٹیرف 16-2015 کے تحت جولائی میں استعمال ہونے والی بجلی کے لیے 86 پیسے فی یونٹ اضافی لاگت آئے گی۔

اس میں ڈسکو کو لگ بھگ 13 بلین روپے کی آمدنی کا تخمینہ شامل ہے۔

Happy
Happy
0 %
Sad
Sad
0 %
Excited
Excited
0 %
Sleepy
Sleepy
0 %
Angry
Angry
0 %
Surprise
Surprise
0 %

Average Rating

5 Star
0%
4 Star
0%
3 Star
0%
2 Star
0%
1 Star
0%

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

جونی ڈیپ سابق اہلیہ کے خلاف ہرجانے کے ٹرائل میں تاخیر کے خواہاں

ہولی وڈ اداکار 57 سالہ جونی ڈیپ نے امریکی عدالت میں اپنی سابق اہلیہ اداکارہ امبر ہرڈ کے خلاف دائر کیے گئے ہرجانے کے مقدمے کا ٹرائل مؤخر کرنے کی درخواست دائر کردی۔
Johnny-Depp-wSD